اردو

مقبوضہ فلسطین | شیخ جراح کے رہائشیوں پر اسرائیلی فوج کی بربریت


اسرائیلی قابض پولیس نے مقبوضہ بیت المقدس میں واقع شیخ جراح محلے میں احمد فراح کو مار پیٹ کرنے کے بعد اسے گرفتار کیا ۔ عینی شاہدین کے مطابق بے گھر ہونے سے انکار کے پس منظر کے خلاف ، ان کے ساتھ اظہار یکجہتی کی جھڑپوں میں محلے کے 20 دیگر رہائشی بھی زخمی ہوگئے ۔

مقامی ذرائع نے بتایا ہے کہ قابض فوج نے شدید جارحیت کے بعد شیخ جراح کے لوگوں کی حمایت میں ایک مظاہرے میں شرکت کے دوران دو مزید فلسطینیوں کو بھی گرفتار کیا ۔

ویڈیو کلپس سے ظاہر ہوتا ہے کہ قابض فوج نے شیخ جراح کے لوگوں پر حملہ کیا ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ قابض فورسز نے محلے کے لوگوں کی حمایت کے لئے آنے والے کارکنوں کو دبا دیا اور قدس کے باسیوں کو بے گھر ہونے کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ جھڑپوں کے نتیجے میں فلسطینی زخمی ہوگئے اور ان میں سے 3 کو اسپتال منتقل کردیا گیا ۔

سوشل میڈیا پر اکاؤنٹس نے اگلے جون تک قدس کے علاقے شیخ جراح میں رہائشی خالی کرنے کے فیصلے پر قبضہ جمنے کی خبر گردش کی لیکن یہ بے بنیاد نکلا ۔

صحیح بات یہ ہے کہ اسرائیلی سپریم کورٹ نے یہودی کے نام پر یہودی کے نام پر محلے کے مغربی کنارے پر ام ہارون میں لینڈ پارسل کے اندراج کے عمل کو منجمد کرنے کا ایک عارضی احتیاطی حکم جاری کیا ۔

عدالت نے حکومت کو متعدد انجمنوں کے ہمراہ شیخ جراح فیملیز ایسوسی ایشن کے ذریعہ پیش کردہ پٹیشن پر جواب دینے کی اگلی تاریخ اگلے مہینے کی دی ہے ۔