اردو

مقبوضہ فلسطین | قابض فورسز نے نابلس میں دھاوا بول دیا


گذشتہ شام اور آج صبح اسرائیلی قابض فورسز نے نابلس کے مشرقی علاقے میں دھاوا بولا ، زہریلی گیس کی وجہ سے دم گھٹنے سے ایک حاملہ خاتون سمیت متعدد شہری زخمی ہوگئے ۔

مقامی ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ قابض فورسز نے اپنے علاقے کو طوفان برپا کرنے کے دوران زہریلی گیس کو بڑے پیمانے پر فائر کیا اور آباد کاروں کے طوفان برپا ہونے کی تیاری کے لئے اسے "یوسف مزار" کے گرد پھیلادیا جس کے نتیجے میں متعدد شہری اور ایک حاملہ خاتون زخمی ہو گئے ۔

ذرائع نے مزید کہا کہ اسرائیلی فوجیوں نے فلسطینی ہلال احمر کی ایمبولینسوں کو زخمیوں تک پہنچنے سے روکا ۔ انہوں نے بتایا کہ اس علاقے میں جھڑپیں شروع ہوئیں ، اس دوران فوجیوں نے ان نوجوانوں پر آنسو گیس اور ربڑ کی گولیوں سے فائر کیا ۔

ان تصادم سے قبل شہر کے مشرقی علاقے میں قابض فوجوں نے طوفان برپا کیا اور یوسف مزار کے علاقے میں آباد کاروں کے داخلے کی تیاری میں بہت سے جنکشنز اور سڑکیں بند کردیں ۔

قبضے کا الزام ہے کہ یوسف مزار یہودیوں کے لئے ایک طوفان کو دہرانے اور سینکڑوں آبادکاروں کو اس علاقے میں دھکیلنے کے لئے ایک مذہبی دربار ہے جو نابلس میں رہائشی محلوں کے مرکز میں واقع ہے ۔